پانی کا سفر

پانی کا سفر

    by -
    0 0
    Attabad Lake, Gojal, Pakistan

    کشتی والے نے کشتی پر جیپ لوڈ کی تو سارا بوجھ دل پر پڑ گیا۔ قراقرم کے دہشت گرد سنگلاخ پهاڑوں کے تنگ سے درے میں بنی عطاآباد جھیل جس کے محل وقوع، لمبائی اور گہرائی کو جان کر ویسے ہی خوف آتا ھے۔ ایک عام سی کشتی میں تیس منٹ کا سفر پہلے ہی ڈرا رہا تھا که کشتی پر جیپ بھی لوڈ ہو گئی۔ لائف جیکٹ دل کی تسلی کے لیے تھی ورنه جس معیار کی کشتی تھی اسی ہی معیار کی جیکٹ ۔تھی جو شاید تنکے کو بھی ڈوبنے سے نه بچاتی ہو 

    کشتی چلی تو دل سے کئی گمان گزر گئے۔ مجھے یاد پڑا که بیس سال پہلے میرے والد ہمیں لے کر جہلم کسی عزیز کے گھر گئے۔ جن کی طرف گئے وه ہمیں دریائے جهلم کی سیر کروانے لے گئے۔ اس زمانے میں جہلم میں پانی بہتا تھا اور کشتیاں چلتی تھیں، کنارے پر کافی رونق رہتی۔ کشتی پر بیٹھنے لگے تو میری امی نے مجھے نه بیٹھنے دیا۔ میں نے بیٹھنے کی ضد کی تو ماں بولی جب تُو بڑا ھو گا اور تیرا بھی اکلوتا بیٹا ہو گا تو اُسے ایسی خسته کشتی پر میں دیکھوں گی که کیسے بٹھاتا ہے۔ میں کنارے پر امی کے پاس روتا رہا اور باقی سب کشتی کی سیر کرتے رہے۔   

    تیس منٹ کا سفر سوچتے سوچتے گزر گیا۔ کشتی کنارے لگی تو ٹھنڈی ہواؤں کی وجه سے جھیل کا پانی آنکھوں سے بہنے لگا۔ پسو کونز کے بیک ڈراپ میں ملاح کا چہره دھندلا چکا تھا۔ حسینی کے گاؤں میں چلتے چلتے اسکول جاتے نیلی آنکھوں والے بچوں نے ہاتھ ہلا کر اشاره کیا تو جھیل، کشتی اور یادیں پیچھے ره گئیں۔  پہاڑوں پر سنهری دھوپ اتر چکی تھی، موسم بدل چکا تھا۔ پانی کا سفر ختم ہو چکا تھا۔ 

    Syed Mehdi Bukhari
    A landscape photographer based in Sialkot, Pakistan. A network engineer by profession and a traveller, poet, photographer and writer by passion.

    NO COMMENTS

    Leave a Reply